Back

ذیابطیس کنٹرول کرنے کے طریقے

ذیابطیس کا مرض روزانہ کی بنیاد پر توجہ چاہتا ہے اور کئی سادہ طریقے اپنا کر اسے قابو میں رکھا جا سکتا ہے، ماہرین سب سے پہلے صحت مند طرز زندگی اپنانے کی اہمیت پر زور دیتے ہیں اور اس کا پہلا قدم ہے کہ خون میں شکر کی سطح کو کنٹرول میں رکھا جائے، ماہرین ذیابیطس کے شکار افراد کے لیے ان درج ذیل ہدایات پر عمل کرنے کا مشورہ دیتے ہیں

غذا کا خیال رکھیئے
ہم جانتے ہیں کہ ہم جو کھاتے ہیں وہ خون کا حصہ بنتا ہے اور ذیابیطس میں غذا کا انتخاب بہت ضروری ہے، غذائی احتیاط سے اس مرض کی پیچیدگیوں کو کم کیا جا سکتا ہے، ذیابیطس کے شکار افراد کے لیے ضروری ہے کہ وہ کاربوہائیڈریٹس، چکنائیوں اور پروٹین کا خاص خیال رکھیں اور کم کیلیوریز والی غذا کھائیں، اچھی خوراک سے وزن کو قابو میں رکھنے، خون میں شکر کی مقدار کو حد پر رکھنے اور خون میں چکنائیوں کی مقدار کو کنٹرول کرنے میں مدد ملتی ہے

باقاعدہ ورزش
ذیابیطس کے مریض روزانہ کم ازکم تیس منٹ کی ورزش کو اپنا معمول بنا لیں، یہ ورزش جاگنگ بھی ہو سکتی ہے اور دیگر جسمانی مشقت بھی، ورزش پورے جسم پر مثبت اثر ڈالتی ہے اور انسولین کی جاذبیت بڑھا کر ذیابیطس کے مریضوں میں خون میں شکر کی مقدار کم کرتی ہے، ساتھ ہی چربی کم کر کے بدن کو مزید پیچیدگیوں سے محفوظ رکھتی ہے، اسی لیے ذیابیطس کے مریضوں کے لیے ورزش بہت ضروری قرار دی گئی ہے

ذہنی تناؤ کو دور کیجئے
ذہنی تناؤ ایک خطرناک شے ہے جس سے چھٹکارا پانا ہر کسی کے لئے ضروری ہے، خاص طور پر ذیابیطس کے مریضوں میں یہ بلڈ شوگر کو بڑھاتا ہے، یوگا، مراقبے اور دیگر طریقوں سے تناؤ کو دور کر کے خود کو پرسکون رکھئے تو اس کے زبردست اثرات مرتب ہوں گے

ادویات کا باقاعدہ استعمال
آپ کے ڈاکٹر نے کھانے والی جو بھی دوائیں دی ہیں ان کا ناغہ نہ کریں اور دوائیاں پابندی سے کھاتے رہیں، ان میں سے بعض دوائیں لبلبے کو متحرک کرتی ہیں کہ وہ انسولین پیدا کرے اور کچھ انسولین کو بہتر بناتی ہیں، اس لیے ضروری ہے کہ اپنے ڈاکٹروں کے مشورے سے دوائیں ضرور کھاتے رہیں، لیکن یہ بات ہمیشہ یاد رکھیں کہ پرہیز علاج سے بہتر ہے

Advertisements