Back

دانتوں کے درد کا گھریلو علاج

اگر آپ دانت کے درد میں مبتلا ہو چکے ہیں تو آپ اس اذیت سے اچھی طرح واقف ہوں گے اور اس سے نجات پانے کے لیے کئی جتن بھی کر چکے ہوں گے لیکن کچھ ایسی آزمودہ گھریلو تدابیر کے ذریعے دانت کے درد سے چھٹکارا پایا جا سکتا ہے جنہیں ہم عام طور پر نظرانداز کر دیتے ہیں، دانت کا درد کسی کو بھی، کسی وقت بھی ہو سکتا ہے اور اگر رات کے وقت دانت میں درد کی لہریں اٹھنے لگیں تو صورت حال اور بھی زیادہ خراب ہو جاتی ہے، جن علاقوں میں ڈاکٹر نہیں ہوتے وہاں کے لوگ بھی گھریلو ٹوٹکوں ہی سے کم و بیش ہر بیماری کا علاج کرتے ہیں، ایسے ہی کچھ آزمودہ گھریلو نسخے ہیں جن کے ذریعے ہم دانت کےدرد سے نجات پا سکتے ہیں

کھانے پینے میں احتیاط
دانت میں درد ہو تو سب سے پہلے کھانے پینے میں احتیاط پر توجہ دینی چاہیے، زیادہ کھٹی، ٹھنڈی، گرم اور سخت غذاؤں سے پرہیز کریں تاکہ دانتوں کو آرام ملے جب کہ کھانے پینے کے دوران اپنی غذا کو جس حد تک درد والے مقام سے دور رکھ سکتے ہیں ضرور رکھیں، یہ کوئی علاج نہیں لیکن اس احتیاط پر عمل کرنے سے دانت میں درد کی شدت ضرور قابو میں رہے گی

ہاتھ پر برف سے مساج
یہ بات بظاہر ناقابل یقین لگتی ہے لیکن تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ دانت کے درد میں اگر انگوٹھے اور شہادت کی انگلی کے درمیان برف کا ایک چھوٹا سا ٹکڑا دبا کر آہستگی سے ان انگلیوں پر اس کا مساج کیا جائے تو دانت کے درد میں کمی واقع ہوتی ہے، طب کے قدیم اور روایتی طریقوں میں شہادت کی انگلی اور انگوٹھے کی کھال والے حصوں کا جسم کے مختلف حصوں میں درد سے تعلق بیان کیا جاتا ہے، آج تک یہ تو معلوم نہیں ہو سکا کہ آخر اس کی سائنسی وجہ کیا ہے لیکن اس ٹوٹکے سے لوگوں کو فائدہ ضرور ہوتا ہے

لونگ کا تیل
مشرق ہو یا مغرب، جدید میڈیسن ہو یا قدیم طب، ہر جگہ اور ہر زمانے میں لونگ کے تیل کو دانتوں کے درد میں اکسیر قرار دیا جاتا ہے، روئی کا ایک چھوٹا پھویا لیں اور اسے لونگ کے تیل میں ڈبو کر دانت میں اس جگہ رکھیں جہاں درد ہو رہا ہے، تھوڑی دیر میں دانت کا درد کم ہو جائے گا

نیم گرم نمکین پانی کے غرارے
ایک گلاس نیم گرم پانی میں ایک چائے کا چمچہ نمک ملا لیں اور اس پانی سے غرارے کریں، ساتھ کوشش کریں کہ غرارے کرتے دوران یہ نمکین پانی منہ میں خاص طور پر اس جگہ سے ٹکراتا رہے جہاں دانت میں درد ہو رہا ہے، یہ اس لیے بھی ضروری ہے کیونکہ عام خوردنی نمک میں قدرتی طور پر جراثیم کش صلاحیت پائی جاتی ہے، نیم گرم پانی، منہ میں تکلیف کا باعث بننے والے جرثوموں کو ہلاک کر کے درد میں کمی لاتا ہے، زیادہ درد کی صورت میں بہتر ہے کہ ہر ایک سے دو گھنٹے بعد نیم گرم نمکین پانی سے غرارے کیے جائیں

Advertisements