Back

ورزش سے جلن اور سوزش کا علاج

جہاں ورزش کے بے شمار فوائد ہیں وہیں اب تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ ورزش جسم کے کسی حصے میں جلن اور سوزش کو کم کرنے میں بہت مددگار ثابت ہوتی ہے

طبی ماہرین سوزش کو بہت خطرناک تصور کرتے ہیں کیونکہ یہ کئی امراض کا پیش خیمہ ہو سکتی ہے جن میں امراض قلب سے لے کر کینسر تک شامل ہیں، اس سے قبل ورزش کو ذیابیطس اور امراض قلب کو روکنے، میٹابولزم ٹھیک کرنے اور پٹھوں اور عضلات کی مضبوطی میں اہم تصور کیا جاتا رہا ہے لیکن اب تحقیق سے واضح ہوا ہے کہ ورزش جسمانی جلن کو بھی کم کرتی ہے اور جسم کے قدرتی دفاعی نظام کو بہترحالت میں رکھتی ہے

روزانہ بیس منٹ کی ورزش بھی آپ کے لیے کرشماتی اثر رکھتی ہے، ورزش سے جسم کا سمپیتھیٹک نروس سسٹم سرگرم ہو جاتا ہے جو جسم میں سوزش کو کم کرتا ہے، یہ نظام دل کی دھڑکن بڑھاتا ہے اور بلڈ پریشر اور سانس کو بھی تیز کرتا ہے، جسمانی ورزش اس نظام کو مؤثر بناتی ہے، ورزش کے دوران جسم سے کچھ ہارمونز خون میں شامل ہوتے ہیں اور جسم کے دفاعی نظام کو سرگرم کرتے ہیں

اگرچہ جسم میں سوزش و جلن معمول کی بات ہے لیکن اس کی بہت زیادتی موٹاپے، ذیابیطس، امراض قلب، جگر کی بیماری اور دیگر خطرناک امرض کی وجہ بن سکتی ہے، اس لئے ضروری ہے کہ ورزش کو روزمرہ معمولات کا حصہ بنایا جائے

Advertisements