Back

دودھ کے خواص اور فائدے

دودھ ایک صحت بخش قدرتی غذا ہے، یہ ہمیں جانوروں سے حاصل ہوتا ہے، دودھ ایک رقیق مرکب ہے جس کا زیادہ حصہ پانی پر مشتمل ہے، مختلف جانوروں کے دودھ میں پانی کی مقدار بھی مختلف ہوتی ہے، میعاری دودھ حاصل کرنے کے لئے ضروری ہے کہ یہ تندرست جانور سے حاصل کیا جائے، جانور کو اچھی خوراک دی جائے، دودھ نکالنے سے پہلے اس کے تھن اچھی طرح صاف کیے جائیں تا کہ بیرونی غلاظت دودھ میں شامل نہ ہو، جس برتن میں دودھ نکالا جائے وہ برتن صاف ہو اور دودھ کو ڈھانپ کر رکھا جائے

دودھ سے پیدا ہونے والے مسائل

دودھ اگر ڈھانپ کر نہ رکھا جائے تو اس پر مکھیاں، آس پاس کی دھول اور گوالوں کے گندے ہاتھ سے مختلف اقسام کے جراثیم داخل ہو جاتے ہیں، کمزور اور بیمار جانوروں سے حاصل کیے جانے والا دودھ بھی کئی خطرناک بیماریوں کا سبب بن سکتا ہے، گوالوں کے صفائی کا خیال نہ رکھنے سے گلہ اور معدہ کی کئی بیماریاں لگ سکتی ہیں، کچا دودھ بھی کئی بیماریوں کا سبب بن سکتا ہے

گرمیوں میں دودھ اگر جلد ہی ٹھنڈا نہ کیا جائے یا اسے ابالا نہ جائے تو اس کے خراب ہونے کا خطرہ رہتا ہے اور اگر ایسا خراب دودھ پی لیا جائے تو معدہ اور آنتوں کی خطرناک بیماریاں پیدا ہو سکتی ہیں، بیمار اور گندگی کھانے والے جانوروں کا دودھ ہرگز استعمال نہ کریں، یا تو تازہ دودھ فورا پی لیں یا پھر جوش دے کر استعمال کریں، دودھ میں پانی کے علاوہ پروٹین، چکنائی، معدنی اجزاء، کیلشیم، فاسفورس، آئرن، اور وٹامن بی جیسے اجزاء پائے جاتے ہیں

دودھ کے فائدے

دودھ کا مزاج گرم ہے، دودھ بچوں، جوانوں اور دماغی کام کرنے والوں کے لئے صحت بخش غذا ہے، دودھ استعمال کرتے رہنے سے یادداشت تیز ہوتی ہے اور دماغی قوت میں اضافہ ہوتا ہے، تھکاوٹ دور ہوتی ہے اور جسمانی طاقت قائم رہتی ہے، دودھ بیماروں کے لئے مکمل صحت بخش ہے

دودھ ایک ایسی مفید غذا ہے جس کے استعمال سے معدہ کی تیزابیت اور سینے کی جلن دور ہوتی ہے، دودھ قبض کشا ہے اور پسینہ و پیشاپ کے ذریعے بدن کا زہر خارج کرتا ہے، دودھ پینے والے کی عمر بڑھتی ہے اور بیماریوں سے حفاظت رہتی ہے، دودھ زود ہضم ہے اور دل، جگر، معدہ، انتڑیوں، غدود اور ہڈیوں کی گرمی و خشکی دور کرتا ہے

دیکھنے میں آیا ہے کہ اکثر لوگوں کو دودھ پینے سے قبض کی شکایت ہو جاتی ہے، اس کی وجہ بازاری ملاوٹ والا دودھ ہے، جنہیں خالص دودھ نہ ملے انہیں چاہیے کہ وہ دودھ میں ایک چھوہارہ ڈال کر گرم کریں، اس سے دودھ ہضم ہونے میں آسانی ہو گی، دودھ نیند نہ آنے کا بہترین علاج ہے، جن لوگوں کو نیند نہ آتی ہو انہیں چاہیے کہ رات کو سونے سے قبل ایک گلاس ابلا ہوا دودھ شہد ملا کر پی لیا کریں، دودھ سے قدوقامت بڑھتی ہے اور وزن میں اضافہ ہوتا ہے، دبلے پتلے لوگوں کے لئے دودھ کا متواتر استعمال انتہائی مفید رہتا ہے، آنکھیں صاف اور چمکدار ہوتی ہیں اور رنگت میں نکھار آتا ہے، میعاری دودھ بخار کا علاج ہے، ہڈیوں میں کیلشیم پیدا کرتا اور خون بڑھانے کے لئے کارآمد ہے

دودھ دن کے کسی بھی حصے میں پیا جا سکتا ہے، دودھ ہمیشہ گھونٹ گھونٹ بھر کر پینا چاہیے، اس سے آکسیجن ملتی ہے اور دودھ جلدی ہضم ہوتا ہے، ایک تندرست جسم میں دودھ دو گھنٹوں میں ہضم ہو جاتا ہے، بہتر طریقہ تو یہی ہے کہ دودھ تازہ اور کچا پیا جائے، اگر دودھ دوہنے کے بعد رکھا جائے تو اس میں جراثیم شامل ہو جاتے ہیں، ایسی صورت میں دودھ کو دو منٹ جوش دے لینا چاہیے، لیکن یاد رکھیں کہ زیادہ جوش دینے سے دودھ کے غذائی اجزاء ضائع ہو جاتے ہیں

Advertisements