Back

ادرک کے خواص اور فائدے

عربی زبان میں ادرک کو زنجیل کہا جاتا ہے، اس کا اصل وطن برصغیر ہے، چونکہ اس کی زندہ جڑوں کو منتقل کرنا بہت آسان ہے اس وجہ سے ادرک کی کاشت دنیا کے کئی ممالک میں کی جاتی ہے لیکن ہندوستان کے صوبہ کیرالہ میں پیدا ہونے والا ادرک خوشبو، ذائقہ اور طبی فوائد کے لحاظ سے بہترین نسل کا ہے، بو علی سینا اور دیگر کئی حکماء کی کتابوں میں ادرک کے طبی فوائد کا ذکر کثرت سے ملتا ہے

ادرک میں رطوبت کے علاوہ پروٹین، ریشے، معدنی اجزاء، چکنائی، فاسفورس، وٹامن سی، کیلشیئم، کاربوہائیڈریٹس اور آئرن جسے اجزاء پائے جاتے ہیں

ادرک نظام انہضام میں بہتری لاتی اور معدہ و آنتوں کو تقویت پہنچاتی ہے، سانس کے امراض میں مبتلا مریضوں کو ادرک کے استعمال سے فائدہ ہوتا ہے، ادرک میں نظام انہضام سے متعلق تقریبا تمام خرابیوں کا علاج ہے، جن میں بدہضمی، ریاح، قے، معدہ کے زخم، وغیرہ قابل ذکر ہیں، کھانا کھانے کے فورا بعد ادرک کا ٹکڑا منہ میں رکھ کر چبایا جائے تو معدہ کے کئی امراض سے چھٹکارہ ملتا ہے، اس طرح ادرک چبانے سے لعاب دہن کی مقدار پڑھتی اور ہاضم انزائمز کی پیداوار میں اضافہ ہوتا ہے، ادرک بادی پن، پھارہ اور ہر قسم کے پیٹ درد کو دور کرتا ہے

ادرک کا جوس شہد میں ملا کر دن میں تین چار مرتبہ پیتے رہنے سے کھانسی میں افاقہ ہوتا ہے، ادرک جنسی کمزوری کے لئے بہت مفید ہے، بہتر نتائج کے لئے آدھا چمچ ادرک کا پانی، ایک عدد ابلا ہوا انڈا اور تھوڑا سا شہد ملا کر رات کو سونے سے قبل ایک ماہ مسلسل استعمال کرنے سے جنسی توانائی حاصل ہوتی ہے

اگر صفراکی وجہ سے متلی، قے یا بدہضمی ہو تو ادرک کا پانی آدھا چمچ، لیموں کا رس ایک چمچ اور پودینے کا پانی ایک چمچ میں تھوڑا سا شہد ملا کر استعمال کریں، سردی سے ہونے والے بخار اور زکام کی حالت میں ادرک کی چائے بہت مفید ہے، چائے بنانے کا طریقہ یہ ہے کہ پانی میں ادرک کے چند ٹکڑے ڈال کر چند لمحے ابلنے دیں اور پھر اس میں چائے کی پتی ڈالیں

سرد ہوا لگنے، ٹھنڈے پانی سے نہانے یا سرد مشروبات پینے سے اگر حیض رک جائے تو روزانہ تین وقت کھانے کے بعد تازہ ادرک کا ایک ٹکڑا کوٹ کر ایک کپ پانی میں چند منٹ ابال کر اور حسب ذائقہ چینی شامل کر کے استعمال کریں، حیض کی رکاوٹ دور ہو جائے گی

ایک کپ میتھی کے جوشاندہ میں ایک چمچ ادرک کا رس اور حسب ذائقہ شہد ملا کر روزانہ استعمال کرنے سے خوب پسینہ آتا ہے اور یہ بخار،دمہ، کالی کھانسی اور تپ دق کا بھی بہترین علاج ہے

Advertisements